مصنف عبد الرشید عراقی ناشر نعمانی کتب خانہ، لاہور صفحات 137 یونیکوڈ کنورژن کا خرچہ 4110 (PKR) شیخ الاسلام امام ابن تیمیہ رحمہ اللہ ساتویں صدی ہجری کی عظیم شخصیت تھے،جن کے علمی کارہائے نمایاں کے اثرات آج بھی پوری آب وتاب سے موجود ہیں۔آپ نے اپنی پوری زندگی دین اسلام کی نشرواشاعت ،کتاب وسنت کی ترویج وترقی اور شرک وبدعت کی تردید وتوضیح میں بسر کردی ۔امام صاحب علوم اسلامیہ کا بحر ذخار تھے اور تمام علوم وفنون پر مکمل دسترس اور مجتہدانہ بصیرت رکھتے تھے۔آپ نے ہر علم کا مطالعہ کیا اور اسے قرآن وحدیث کے معیار پر جانچ کر اس کی قدر وقیمت کا صحیح تعین کیا۔مختلف گوشوں میں آپ کی تجدیدی واصلاحی خدمات آب زر سے لکھے جانے کے لائق ہیں ۔امام ابن تیمیہ صرف صاحب قلم عالم ہی نہ تھے ،صاحب سیف مجاہدبھی تھے ،آپ نے میدان جہاد میں بھی جرأت وشجاعت کے جو ہر دکھائے ۔آپ کی طرح آپ کے تلامذہ بھی اپنے عہد کے عظیم عالم تھے ۔جناب عبدالرشید عراقی صاحب نے زیر نظر کتاب میں امام ابن تیمیہ اور ان کے چار جلیل القدر تلامذہ امام ابن کثیر،حافظ ابن قیم،حافظ عبدالہادی اور امام ذہبی کے حالات زندگی اور ان کے علمی کارناموں کا احوال بیان کیا ہے ،جو لائق مطالعہ ہے ۔(ط۔ا)

عناوین صفحہ نمبر انتساب 12 پیش لفظ 14 تعارف 16 مقدمہ 23 عقیدہ توحید کی تجدید اور مشرکانہ عقائد کا ابطال 28 فلسفہ ومنطق اور علم کلام کی تردید 29 علوم شریعت کی تجدید 30 تلامذہ 32 امام ابن تیمیہ رحمہ اللہ 40 نام ونسب وولادت 45 نقل وسکونت 45 تعلیم وتربیت 47 تکمیل تعلیم 49 قاضی بننے کی پیشکش 52 سلطان مصر سے شکایت 66 ذاتی اوصاف واخلاق وعادات 73 تصانیف 77 امام ابن تیمیہ رحمہ اللہ کے شاگردان رشید 84 وفات 93 تصانیف کی فہرست 95 حافظ ابن عبدالہادی رحمہ اللہ 106 چار مشہور تصانیف کا مختصر تعارف 110 حافظ ابن کثیر رحمہ اللہ 112 مشہور تصانیف کا تعارف 118 حافظ ذہبی رحمہ اللہ 123 مشہور تصانیف کا مختصر تعارف 130